ایران کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے، ہمیں امریکی پابندیوں کا مصنوعی حل قبول نہیں: ایران

0
130

ایران کا کہنا ہے کہ ویانا میں فریقین کے درمیان ہونے والا اجلاس اس کے ساتھ عالمی طاقتوں کے جوہری معاہدے کو بچانے کا ’آخری موقع‘ ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے ’رائٹرز‘ کی رپورٹ کے مطابق تہران نے خبردار کیا ہے کہ وہ امریکی پابندیوں کا ’مصنوعی‘ حل قبول نہیں کریں گا۔

سفارت کاروں کا کہنا ہے کہ ایران اپنی دی گئی مدت سے چند دن کے فاصلے پر ہے اور وہ اس معاہدے سے دستبردار بھی ہوسکتا ہے۔

ایران سمیت جوہری معاہدے کے دیگر فریق معاہدے کو برقرار رکھنے کے مقصد کے تحت اجلاس میں شریک ہیں، لیکن یورپی طاقتوں کے پاس ایرانی معیشت کو امریکی پابندیوں سے محفوظ کرنے کی محدود صلاحتیں ہیں۔

تاحال یہ واضح نہیں کہ وہ تہران کے مطالبے پر کس طریقے سے اسے اقتصادی مدد فراہم کر سکتے ہیں۔

image.png

ایران کی نیم سرکاری خبر ایجنسی ‘فارس نیوز’ کی جانب سے جاری بیان میں ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان عباس موسوی نے کہا کہ ’ میرا خیال ہے کہ یہ ملاقات دیگر فریقین کے لیے آخری موقع ہے کہ وہ جمع ہوں اور دیکھیں کہ وہ کس طرح ایران سے کیے گئے وعدوں پر پورا اتر سکتے ہیں‘۔

loading...

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here